ایم این ایچ ملازمین کا مطالبات کے حق میں احتجاجی دھرنا

مظفرآباد (20 جون 2022 )مٹرنل نیو بورن اینڈ چائیلڈ ہیلتھ کیئرپروگرام (ایم این سی ایچ)آزادکشمیر کے1242 عارضی ملازمین کانارمل میزانیہ پر منتقلی کے لئے مظفرآباد سیکرٹریٹ کے باہر احتجاجی دھرنا ۔ایک ہزار سے زائد خواتین اپنے معصوم بچوں کے ہمراہ صبح سے کھلے آسمان تلے بیٹھی رہیں ،کسی حکومتی شخصیت نے ان کے پاس جانے کی زحمت گوارہ نہ کی ۔
سہہ پہر چار بجے کے قریب وزیر صحت ڈاکٹر انصر ابدالی اور ڈی جی صحت کا ایم ایچ سی پروگرام کے ملازمین کے دھرنے میں آمد
ایم این سی ایچ کے ملازمین کو نارمل میزانیہ پر لایا جا رہا ہے وزیر صحت
فائل ورک مکمل ہو چکاہے آپ تسلی رکھیں آپ کے تمام معاملات من وعن تسلیم کریں گے آپ گھروں کو جائیں, ایم این سی ایچ کے 4حصے ہیں 3نارمل سمجھیں ایک کو فی الوقت نارمل نہیں کر سکتے
ایم سی ایچ کے ملازمین نے وزیر صحت کی یقین دہانی ہر اپنا احتجاج موخر کردیا
تفصیلات کے مطابق ماں اوربچے کی صحت کے حوالے سے 15 سال قبل ایم این سی ایچ کاپروگرام پورے ملک اورآزادکشمیرمیں شروع کیاگیاتھا جو پاکستان کے تمام صوبہ جات میں جاری ہے تاہم آزادکشمیر میں گزشتہ 15 سال سے اس پروگرام کے ساتھ وابستہ1242 سے زائد ملازمین کو مستقل نہیں کیا گیا ۔اس موقع پر میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے ایم این سی ایچ کی ایکشن کمیٹی کے ساجد عظیم، بابر میر، عدنان مغل، ندیم سرور، زاہد اعوان، شیراز مغل نے بتایاکہ ایم این سی ایچ کے معاملات میں سیکرٹری مالیات رکاوٹ حائل کیئے ہوئے ہیں. پاکستان بھر میں ایم این سی ایچ کے ملازمین کو نارمل میزانیہ پر منتقل کیا گیا ہے جبکہ آزادکشمیر حکومت 30 جون کو 1242 ملازمین کو ملازمتوں سے فارغ کرتے ہوئے ایم این سی ایچ کو ختم کر رہی ہے. ہم گزشتہ کئی روز سے سراپا احتجاج ہیں لیکن ہماری کوئی شنوائی نہیں ہو رہی ہے. انہوں نے کہا کہ کورونا ویکسینیشن، پولیو ویکسینیشن، سمیت دیگر بیماریوں کے خلاف یہی ملازمین میدان میں جوبیس گھنٹے موجود ہوتے ہیں لیکن پندرہ سال ہو گئے ہیں ہمیں نارمل میزانیہ پر نہیں لایا گیا،
محکمہ صحت عامہ کے تحت پندرہ سال سے جاری ترقیاتی سکیم نیشنل ایم این سی ایچ کے ملازمین نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ اس پروگرام کو نارمل میزانیہ پر منتقل کرتے ہوئے سیکڑوں ملازمین اور ان کے خاندانوں کو معاشی تحفظ دیا جائے۔ ملازمین نے مطالبہ کیا کہ وزیراعظم آزاد کشمیر سردار تنویر الیاس کے اعلان پر فوری عملدرآمد کرتے ہوئے ملازمین کو نارمل میزانیہ پر منتقل کیا جائے تاکہ ملازمین اور ان کے اہلخانہ کی بے چینی ختم ہو سکے. احتجاجی دھرنے میں پنشنرز ایسوسی ایشن آزادکشمیر کے صدر راجہ ممتاز خان، سید وقار حسین جعفری صدر پیرامیڈیکل سٹاف ایسوسی ایشن آزادکشمیر، قاضی تنویر حسین چیف آرگنائزر پیرا میڈیکل سٹاف ایسوسی ایشن، قاضی محمد صدیق، سید نذیر حسین شاہ سابق امیدوار اسمبلی مرکزی رہنما جماعت اسلامی آزاد کشمیر و دیگر نے خطاب کرتے ہوئے ملازمین سے مکمل یکجہتی کا اظہار کیا.