مہنگائی کی مجموعی شرح 28.05 فیصد تک پہنچ گئی

مہنگائی کی شرح میں مسلسل اضافہ،ایک ہفتے میں مہنگائی مزید 1.01 فیصد بڑھ گئی

یک ہفتے کے دوران کھانے پینے کی 32 اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہوا

دال مونگ 9 روپے،دال ماش13 روپے اور 20 کلو آٹے کے تھیلے کی قیمت میں 24 روپے 89 پیسے اضافہ ریکارڈ،ادارہ شماریات

#/H

آئٹم نمبر…68

اسلام آباد(صباح نیوز) مہنگائی کی شرح میں مسلسل اضافہ،ایک ہفتے میں مہنگائی 1.01 فیصد بڑھ گئی،مہنگائی کی مجموعی شرح 28.05 فیصد تک جا پہنچی،ایک ہفتے کے دوران 32 اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہوا،دال مونگ 9 روپے،دال ماش13 روپے اور 20 کلو آٹے کے تھیلے کی قیمت میں 24 روپے 89 پیسے اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔ حکومتی دعوے سب ہوا، مہنگائی میں مسلسل اضافہ جاری،ایک ہفتے میں مہنگائی 1.01 فیصد بڑھ گئی، مہنگائی کی مجموعی شرح 28.05 فیصد تک جا پہنچی، ایک ہفتے کے دوران 32 اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہوا، اس دوران صرف 4 اشیا کی قیمتوں میں کمی اور 16 کی اشیا کی قیمتیں مستحکم رہیں۔ ادارہ شمارایات نے ہفتہ وار رپورٹ جاری کر دی۔ رپورٹ کے مطابق ایک ہفتے میں 32 اشیا ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا، ایک ہفتے میں پیاز کی فی کلو قیمت میں 4 روپے 9 پیسے اضافہ ہوا، دال مونگ 9 روپے 02 پیسے مہنگی ہوئی، 5 لیٹر کوکنگ آئل ایک ہفتے میں 122 روپے تک مہنگا ہوا، 5 لیٹر کوکنگ آئل کی قیمت 2770 روپے تک پہنچ گئی۔ ادارہ شماریات کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ ایک ہفتے میں 20 کلو آٹے کے تھیلے کی قیمت میں 24 روپے 89 پیسے اضافہ ہوا، ایک ہفتے کے دوران دودھ کی فی کلو قیمت میں 2 روپے 3 پیسے ،دال ماش کی فی کلو قیمت میں 12 روپے 77 پیسے تک کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جبکہ فی درجن انڈے 7 روپے 19 پیسے مہنگے ہوئے۔ ادارہ شماریات کا کہنا ہے کہ برانڈڈ گھی فی کلو 21 روپے تک مہنگا ہوا، دال مسور کی فی کلو قیمت میں 11 روپے تک اضافہ ہوا۔ ادارہ شماریات کے مطابق ایک ہفتے میں 4 اشیا کی قیمتوں میں کمی ہوئی، اس دوران 15 اشیا کی قیمتوں میں استحکام رہا۔