راولاکوٹ. حوا کی بیٹی ابن آدم کی حوس کا شا

راولاکوٹ(نیل فیری نیوز)راولاکوٹ کے قریبی گاؤں سنگولہ سے تعلق رکھنے والی نوجوان یتیم لڑکی طوبی یعقوب جس کی عمر تقریبا 15 سال ہے نے الزام عائد کیا ہے کہ گاؤں سنگولہ سے تعلق رکھنے والے والے نواز لطیف ولد محمدلطیف جس کی عمر تقریبا 45 سال ہے نے ان سے زبردستی زیادتی کی میرے فوٹو ز اور ویڈیو بنا کر مجھے بلیک میل کرتا رہا اور بار بار زیادتی کا مرتکب ہوتا رہا جس کے نتیجہ میں ناجائز بچی پیدا ہوئی میرے بھائی محمد اسحق ولد محمد یعقوب کی طرف سے میرے ساتھ ہونے والی زیادتی کی ایف آئی آر تھانہ راولاکوٹ میں درج کروا ئی گئی اس دوران نواز لطیف نے عبوری ضمانت کروا لی ۔ ان خیالات کااظہار طوبی ٰ یعقوب نے گزشتہ روز غازی ملت پریس کلب راولاکوٹ میں اپنے ساتھ ہونے والی زیادتی کی تفصیلات سے صحافیوں کو آگاہ کرتے ہوئے کیا اس موقع پر طوبی یعقوب کی والدہ اور بھائی بھی موجود تھے ۔ انہو ں نے کہا کہ ہم غریب لوگ ہیں ہماری کوئی شنوائی نہیں ہے جبکہ نواز لطیف کا تعلق بااثر لوگوں کے ساتھ ہے انہوں نے کہا کہ میرے ساتھ زیادتی کی گئی ،ہو نا تو یہ چاہیے تھا کہ انصاف کے تقاضے پورے کرتے ہوئے ایف آئی آر میں نامزد ملزم نواز لطیف کے خلاف کاروائی کی جاتی ۔ الٹا مجھے تھانے بلا کر تشدد کا نشانہ بنایا گیا پولیس نے مجھ پر دباؤ ڈالا کہ نواز لطیف کا نام لینا چھوڑ دو ۔ یہی نہیں بلکہ پولیس نے اخراجات کے نام پر ہم سے رشوت بھی طلب کی جو میری والدہ نے گائے اور بکری فروخت کر کے دی ۔یتیم لڑکی طوبی ٰ یعقوب نے وزیراعظم آزادکشمیر ، چیف سیکرٹری آزادکشمیر ، انسپکٹر جنرل پولیس آزادکشمیر اور دیگر ذمہ داران سے مطالبہ کیا ہے کہ میرے ساتھ زیادتی کے مرتکب ملزم نواز لطیف کے خلاف کاروائی کی جائے اور اسے گرفتار کر کے کیفر کردار تک پہنچایاجائے تاکہ انصاف کے تقاضے پورے ہوسکیں

اپنا تبصرہ بھیجیں