میرپور ضمنی الیکشن منسوخ کر دیئے گئے

آزادکشمیر ہائی کورٹ نے سینئر قانون دان فیاض جنجوعہ ایڈووکیٹ کی طرف سے دائر پٹیشنر پر فیصلہ سناتے ہوئے میرپور ضمنی الیکشن منسوخ کر دئیے۔

پٹیشنر نے موقف اختیار کیا تھا کہ الیکشن کمیشن کی طرف سے انتخابی مرحلے کا جو نوٹیفکیشن جاری کیا تھا وہ غیر قانونی ہے اور سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کی طرف سے ضمنی الیکشن بارے جو ایگزیکٹو آرڈر جاری کیا گیا وہ بھی غیر موثر ہے۔ فیاض جنجوعہ ایڈووکیٹ کی طرف سے دایر کردہ پٹیشن کو ابتداء میں ہائی کورٹ نے خارج کیا تھا جسے انہوں نے سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔

سپریم کورٹ نے یہ کیس قایم مقام چیف جسٹس ہائی کورٹ جسٹس اظہر سلیم بابر کو سننے کی ہدایت کی تھی۔ قائم مقام چیف جسٹس نے فریقین سے موقف لینے کے بعد آج میرپور ضمنی انتخابات پر حکم امتناعی جاری کر دیا ہے اور حکومت کو ہدایت کی ہے کہ وہ پہلے الیکشن کے لوازمات پورے کرے اور انتخابات کا دوبارہ اعلان کرے۔

یاد رہے کہ اس وقت چیف الیکشن کمیشن کی اسامی خالی ہے جبکہ الیکشن کا شیڈول الیکشن کمیشن کے دو ممبران نے جاری کیا تھا جس کو عدالت میں چیلنج کیا گیا تھا۔ میرپور شہر کی یہ اسمبلی نشست چوہدری سعید کی سپریم کورٹ سے نا اہلی کے بعد خالی ہوئی تھی اور اس سیٹ پر 26 نومبر کو سابق وزیراعظم بیرسٹر سلطان محمود چوہدری اور چوہدری سعید کے بیٹے چوہدری صعیب کے درمیان مقابلہ تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں