چکسواری، ندیم روپیال وفا کا پیکرتھے، اُن کی موت اپنوں بیگانوں کو اشکبارکرگئی۔ مقررین کا تعزیتی ریفرنس سے خطاب

چک سواری (شہزاد عظیم سے) سانحہ چک سواری شادی ہال کے شہداء پاکستان پیپلزپارٹی آزادکشمیرتحصیل میرپورکے سابق صدرچودھری ندیم حسین روپیال اوراُن کے فرزندرحیم حسین روپیال کی یادمیں پاکستان پیپلزپارٹی حلقہ ایل اے2 چک سواری اسلام گڑھ کے زیراہتمام گذشتہ روز (بدھ) چک سواری ریسٹ ہاؤس میں تعزیتی ریفرنس کاانعقادکیاگیا جس میں سابق وزیراعظم چودھری عبدالمجید، معروف سیاسی سماجی وکاروباری شخصیت سابق چیئرمین یونین کونسل پنیام حاجی چودھری فضل حسین روپیال، سابق اُمیدواراسمبلی چودھری عبدالرحمن ایڈووکیٹ، چودھری گل حسین، چودھری گودڑ، بیرسٹرکرامت حسین، سابق ایڈمنسٹریٹرمیونسپل کارپوریشن میرپورچودھری غلام رسول عوامی، چودھری نعیم حسین روپیال، پیپلزپارٹی ضلع میرپورکے صدرچودھری قاسم مجید، مرکزی نائب صدرپی وائی اوچودھری سفیان ایوب، پی وائی اوضلع میرپورکے صدر چودھری لقمان لیاقت سمیت کثیرتعدادمیں حلقہ ایل اے2چک سواری اسلام گڑھ سے پاکستان پیپلزپارٹی آزادکشمیرکے عہدے داران وکارکنان، سیاسی وسماجی شخصیات، صحافیوں اورعوام علاقہ نے شرکت کی۔

تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم چودھری عبدالمجیدنے کہاکہ شہیدچودھری ندیم حسین روپیال نے اپنے مختصرسیاسی سفرمیں ایسی کامیابیاں حاصل کیں جوہرکسی کے بس کی بات نہیں۔شہیدچودھری ندیم حسین روپیال کی موجودگی میں حلقہ چک سواری کے حوالے سے ہمیں کوئی فکرنہیں ہواکرتی تھی۔جب بھی کوئی مہمان،انتظامی آفیسریاسیاسی راہ نماچک سواری آتاہم اُسے روپیال ہوٹل ٹھہرنے کاکہتے اورہمیں اس بات کایقین ہوتاتھاکہ شہید چودھری ندیم حسین روپیال کسی قسم کی شکایت کاموقع نہیں دیں گے۔انہوں نے کہاکہ زندگی اورموت خالق کائنات کے اختیارمیں ہے اس میں کسی کابس نہیں چلتا۔ہمیں اللہ کی رضامیں راضی رہنا چاہیے۔شہیدچودھری ندیم حسین روپیال وفاکاپیکرتھے اورانہوں نے ساری زندگی پیپلزپارٹی اورہم سے وفانبھائی۔اب ہماری ذمہ داری ہے کہ اُن کی دی ہوئی محبتوں کاقرض چکائیں۔انہوں نے کہاکہ روپیال خاندان کے لیے ہماراخون بھی حاضرہے۔تعزیتی ریفرنس میں آمدپرتمام عوام علاقہ، صحافیوں، شہیدکے اہل خانہ کاتہہ دل سے شکرگزارہوں اورخالق کائنات کی بارگاہ میں صبرجمیل کے لیے دعاگوہوں۔

اس کے علاوہ تقریب سے بیرسٹرکرامت حسین، چودھری عبدالرحمن ایڈووکیٹ، چودھری غلام رسول عوامی، لالہ چودھری سوارخان، چودھری قاسم مجید، قاضی محمود، حاجی ادریس ڈھانگری بالا، چودھری منشی گجرٹھیکریاں، چودھری ناظم اسلام گڑھ، سابق ایڈمنسٹریٹر میونسپل کمیٹی چک سواری حاجی چودھری خالدحسین، سابق ایڈمنسٹریٹرمیونسپل کمیٹی اسلام گڑھ عظیم بھٹی، سابق سیکرٹری ڈسٹرکٹ بارمیرپورچودھری محمدبشارت ایڈووکیٹ، آزادپریس کلب چک سواری کے سینئرنائب صدر و بانی صدرثواب فاؤنڈیشن انجینئرحسنین ادریس، سیدصابرحسین راجوروی، ماسٹرفضل الرحمن، چودھری حنیف، نمبردار چودھری محمدشفیق، چودھری لقمان لیاقت، صحافی انصرمحمودغزالی، منشاء تاج، ملک تنویرسبحانی خالق آباد، چودھری راشدپلاکوی، چودھری عاشق محمودآباد، ریٹائرڈصدرمعلم حاجی چودھری محمدبشیرپرواز، صدرعبدالرشیدحمیدآبادکالونی، مرکزی انجمن تاجراں چک سواری کے سیکرٹری جنرل حاجی اورنگ زیب، چودھری زاہدایڈووکیٹ، صحافی محمداقبال خواجہ، چودھری عمان منظور، چودھری خالدایڈووکیٹ ایسر، چودھری زبیرحمیدآبادکالونی، پہلوان اُسامہ صدیق ارنوع و دیگرنے بھی خطاب کیا۔

مقررین نے شہیدچودھری ندیم حسین روپیال اورچودھری رحیم حسین روپیال کی سیاسی، سماجی، کاروباری خدمات کوزبردست الفاظ میں خراجِ تحسین پیش کیا۔مقررین نے اپنے خطابات میں کہاکہ سانحہ چک سواری شادی ہال کے موقع پر روپیال خاندان بالخصوص خاندان کے بزرگ حاجی چودھری فضل حسین روپیال نے پہاڑجیسے صبرکامظاہرہ کیا۔شہیدندیم حسین روپیال کی مثالی زندگی کی طرح سفرآخرت پرروانگی بھی ناقابل فراموش ہے۔شہیدچودھری ندیم حسین روپیال کی زندگی،اُن کی سیاسی وسماجی خدمات پرکئی کتب لکھی جاسکتی ہیں۔

آخرمیں حاجی چودھری فضل حسین روپیال نے تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ میرے بیٹے اورپوتے کی نمازِ جنازہ میں شرکت اورتعزیت کے لیے آنے والے تمام احباب کادل کی اتھاہ گہرائیوں سے شکریہ اداکرتاہوں۔سانحہ چک سواری شادی ہال کے وقت ریسکیومیں شامل تمام سرکاری وفلاحی اداروں اور عوام علاقہ کابھی شکرگزارہوں جنہوں نے روپیال خاندان کادرد محسوس کیا اور ہمدردی کے جذبے کے تحت کئی روزتک جائے حادثہ پرامدادی کارروائیوں میں شریک رہے۔ حاجی چودھری فضل حسین روپیال نے کہاکہ قبل ازیں بھی روپیال خاندان سماجی کاموں میں بڑھ چڑھ کرحصہ لیتارہاہے اوران شاء اللہ العزیزآئندہ بھی یہ سلسلہ جاری رکھیں گے۔

قبل ازیں تقریب کاباقاعدہ آغازتلاوتِ کلام پاک سے ہوااورنظامت کے فرائض سابق میڈیاایڈوائزر برائے وزیراعظم آزادکشمیریاسرممتازچودھری نے سرانجام دیے۔تقریب کے اختتام پرقاری مطلوب حسین نقشبندی نے سانحہ چک سواری شادی ہال کے شہداء کے درجات کی بلندی،زخمیوں کی جلدصحت یابی اورلواحقین کے لیے صبرجمیل کی دُعاکی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں