پیکرِاخلاص مولانا فضل کریم رحمۃ اللہ علیہ / تحریر: مولانا کبیر احمد

ہزاروں سال نرگس اپنی بے نوری پہ روتی ہے بڑی مشکل سے ہوتا ہے چمن میں دیدہ ور پیدا علّامہ اقبا ل رحمۃ اللہ علیہ نے یہ شعر علّامہ انور شاہ کشمیری کی وفات پر کہا تھا،لیکن مولانا فضل کریم مزید پڑھیں

سلطان الہند حضرت خواجہ معین الدین چشتی رحمتہ اللہ علیہ / تحریر: محمدضیاء الرحمن

ظاہری طور پر آسمان لڑکے پہ مہربان نظر نہیں آ رہا تھا لیکن ظاہریت تو فقط نظر کا فریب ہے. شیر خواری میں بوجہ حالات والدین کو ہجرت کر کے خراسان آنا پڑا. لیکن تاتاریوں نے سلطان سنجر کو شکست مزید پڑھیں

سیاسی اصلاحات اور گڈگورننس….سردار پرویز محمود

غفور صاحب ہمارے دیرینہ ساتھی ہیں اور کافی جذباتی آدمی ہیں۔ ہم انکی پرجوش طبیعت اور وسیع تجربات اور مشاہدات کے ہمیشہ معترف رہے ہیں۔ ہم نے انہیں بتایا کہ ترقی یافتہ معاشرے میں تقریباً ہر چیز کی ناپ تول مزید پڑھیں

آٹے کی بندش / از محمدزاہدرشیداوریاخیل

اماں جی نے جلدی میں آواز دی۔بیٹا یہ پیسے لے جاؤ اور ذرا جلدی سے آٹا لے آؤ۔آج شام کے لیے آٹا ختم ہے۔رات کو آپکے ابو پھر ناراض ہو جائینگے۔کہ روٹی تازہ کیوں نہیں پکائی؟ اویس بھاگتے بھاگتے رکا مزید پڑھیں

آہ۔۔۔۔۔والدماجدصوفی محمدمسکین صاحب مرحوم (حیات و خدمات)

آہ۔۔۔۔۔والدماجدصوفی محمدمسکین صاحب مرحوم تحریر: مولاناعبدالشکورنقشبندی عام فہم زبان،درازقد،مضبوط جسم،کشادہ پیشانی،سفیدرنگت،خوب صورت نقش ونگار،سُرمیلی آنکھیں،نرم وملائم ہاتھ،ہمیشہ ہنستامسکراتاچہرہ ان تمام صفات کواگرمجسم شکل دی جائے تو”والدماجدصوفی محمدمسکین صاحب مرحوم“کاوجودتیارہوتاہے۔ آپ چک سواری میرپورآزادکشمیرکے علاقے موہری پنیام میں حاجی فتح محمدکے مزید پڑھیں

ماں کامقام …… ثناء آغاخان

ماں کاکوئی متبادل نہیں ،جس کسی نے ماں کامقام سمجھ لیا اورانتھک خدمت سے ماں کوراضی کرلیا اس نے جنت اپنے نام کرلی ۔دنیا کی ہرماں اپنے بچوں کیلئے ایک شجرسایہ دار کی مانند ہوتی ہے۔ماں کی آغوش بچوں کیلئے مزید پڑھیں

عورت صرف نام ہی کا مقام کیوں رکھتی ہے اس معاشرےمیں

اس معاشرے کے لوگ اتنے تنگ نظر کیوں ہیں؟ بجائے کسی کی کاوش کو سراہنے کے، اس پر باتیں بنانے کو اپنا فرضِ عین کیوں سمجھتے ہیں؟کیا خواتین کو اسلام نے مکمل حقوق عطا نہیں کر رکھے؟ اگر ایسا ہے مزید پڑھیں

ہندتہذیب سے ہندوراشٹریہ کا سفر…… فاریہ عتیق

بھارت کے اندر کئی برسوں سے ایک نیا سماجی بدلائو دیکھنے کو مل رہا ہے ، دیش ایک آئینی ریاست سےMajoritariaism اور فاشزم کی طرف گامزن ہے ۔اس طرح کے بدلائو کیلئے ضروری نہیں ہے کہ آئینی ڈھانچے کو تبدیل مزید پڑھیں