آزادکشمیر کی حکمران جماعت انتشار کا شکار

سابق وزیراعظم سردار عبدالقیوم نیازی اور وزیراعظم سردار تنویر الیاس کے درمیان اختلافات بڑھ گئے،

قیوم نیازی سے سیکورٹی واپس، سابق وزیر اعظم کو شوکاز نوٹس بھی جاری
وزیرحکومت مقبول گجر بھی وزیر اعظم سے روٹھ گئے ۔ سیاست پارٹی سب کو بالاطاق رکھ کے گجر برادری کےتمام ممبر اسمبلی یکجاں ہیں

اور وقت آنے پر سب کچھ چھوڑ کر ایک جگہ اکٹھے ہو سکتے ہیں ، مقبول گجر

مظفرآباد ( نیل فیری نیوز) آزاد کشمیر کی حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف انتشار کا شکار ہو گئی۔ سابق وزیراعظم سردار عبدالقیوم نیازی اور وزیراعظم سردار تنویر الیاس کے درمیان اختلافات بڑھ گئے۔ اسمبلی کے فلور پر وزیراعظم سردار تنویر الیاس کے خلاف تقریر کیوں کی؟ اس جرم میں قیوم نیازی سے سیکورٹی واپس لے لی گئی

جبکہ پی ٹی آئی کی گورننگ باڈی نے سردار عبدالقیوم نیاز کو شوکاز نوٹس بھی جاری کر دیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ آپ نے حالیہ تقریر میں پی ٹی آئی کے ایم ایل ایز کو اکسانے کی کوشش کی کہ وہ وزیراعظم کے خلاف بغاوت کریں۔ شوکاز نوٹس میں کہا گیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کا آئین ہر ممبر کو پابند کرتا ہے کہ وہ پارٹی کے اندرونی معاملات پبلک فورم پر زیر بحث نہ لائے۔آپ اپنے پارٹی ڈسپلن اور پالیسی کے مغائر طرز عمل کی تسلی بخش وضاحت پاکستان تحریک انصاف کی گورننگ باڈی کو پندرہ ایام کے اندر اصالتا یا تحریری طور پر پیش کریں دوسری جانب وزیراعظم سردار تنویر الیاس کیطرف سے اپوزیشن لیڈر چوہدری لطیف اکبر کی کردار کشی پر پی ٹی آئی کے حکومتی ممبران میں شدید ردعمل پایا تا ہے

۔وزیر اعظم سردار تنویر الیاس اور وزیر صنعت و تجارت چودھری مقبول گوجر میں فاصلے دوبارہ بڑھنے لگے.۔وزیر اعظم آزادکشمیر سے گزشتہ روز چودھری مقبول گجر کی ایک بار پھر توں توں میں میں ہوئی تھی جس کو وزیر حکومت نے اسمبلی فلور پر آن ریکارڈ رکھنے کا کہا ۔وزیرحکومت مقبول گجر نے واضح کر دیا کہ وہ اپنی برادری کیساتھ کھڑے ہونگے

۔آزاد کشمیر اسمبلی میں ایم ایل اے چوہدری مقبول گجر نے کہا کہ کوئی غلط فہمی میں نہ رہے اگر کوئی برادری کی بات کرے گا یا کوئی برادری ازم کرے گا تو پھر ہم گجر برادری ہیں اور ڈٹ کر گجر برادری کے ساتھ کھڑے ہیں ہم گجر غیرت اور عزت والے لوگ ہیں ۔چوہدری مقبول گجر نے یہ بیان آزاد کشمیر اسمبلی میں ہونے والی حالیہ صورتحال کے پیش نظر دھڑہ بندی کی صورت میں دیا ان کا کہنا تھا سیاست پارٹی سب کو بالاطاق رکھ کے گجر برادری کےتمام ممبر اسمبلی یکجاں ہیں اور وقت آنے پر سب کچھ چھوڑ کر ایک جگہ اکٹھے ہو سکتے ہیں واضح رہے کہ اسمبلی فلور پر سابق وزیراعظم قیوم نیازی نے حکومت کے پرخچے اڑا تے ہوئے وزیر اعظم کو چراغ بیگ قرار دیتے ہوئے ان کی طرف سے مانگی گئی معافی پر لعنت بھیجی تھی