انسانیت شرما گئی، بھائی نے سگے بھائی کو قتل کے بعد ٹکڑے کر کے جنگلی جانوروں کے سامنے پھینک دیا

راولاکوٹ کے نواحی گاؤں ترنوٹی کوٹ میں درندگی کی انتہا، سگے بھائیوں نے اپنے ہی بھائی کو تیز دھار آلہ سے کاٹ کر ٹکرے ٹکرے کر ڈالا، پولیس نے موقع پر پہنچ کر مقتول کے جسم کے تیرہ ٹکڑے برآمد کر لیے جبکہ مقتول کے بھائیوں قمر مصری اور طاہر مصری کو حراست میں لے لیا ہے مقتول کی بہن عظمیٰ مصری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ھم چار بھاٸی اور دو بہنیں ہیں والد کی وفات کے بعد دوسرے بھاٸی ھمارے بھاٸی اظہر مصری سے جاٸیداد اور گھر ہتھیانہ چاہتے تھے أخر کا سفاک بھاٸیوں نے اظہر کو بے دردی سے ٹکڑے ٹکڑے کر دیا انہوں نے الزام عاٸد کیا کے مرکزی ملزم اور ماسٹر مائنڈ میرا بھاٸی شوکت مصری ہے جو اسلام أباد بنک میں ملازمت کرتا ھے وہ گھر أیا تھا اور جس دن مقتول گھر سے غاٸب ہوا اس دن دونوں بازار سے اگٹھے گھر گٸے تھے مرکزی ملزم کو فرار کر لیا گیا ہے. ہمارے بھائی کو جس بے دردی اورسفاکانہ طریقے سے قتل کیا گیا اس کی دنیا میں کوئی مثال نہیں ملتی. بھائیوں نے جائیداد ہتھیانے کے لیے بھائی کو تیز دھار آلہ سے کاٹ کر قتل کر ڈالا ہے، میرے بھاٸی قمر مصری نے جو چھوٹا ہے ایک منصوبہ بندی کے تحت قتل اپنے ذمہ لیا ہے تا کہ کل والدہ بیان دے کر معاف کر دیں اور اصل ملزم تفتیش کا حصہ ہی نہ بنے ہمارا مطالبہ ہے کہ واقعہ کی اعلیٰ سطحی تحقیقات کروائی جائیں اور شوکت مصری اصل ملزم کو گرفتار کر کے انصاف دلایا جاٸے پولیس کو گذشتہ روز علاقے سے ایک انسانی ٹانگ ملی تھی جس کے بعد تلاش شروع کی گٸی اور دیگر اعضا ایک نالہ سے ملے ہیں یہ انسانيت سوز واقعہ راولاکوٹ کے نواحی علاقے ترنوٹی کوٹ میں پیش أیا